حکومت قبائلی اضلاع کے انضمام کے حوالے سے واضح اور جامع روڈ میپ جاری کرے۔ اے این پی

رکن صوبائی اسمبلی شگفتہ ملک کی جانب سے جمع کرائی گئی قرارداد کے مطابق 25ویں آئینی ترمیم اور صدر کی جانب سے اس کی منظوری کو پانچ ماہ کا عرصہ ہوگیا تاہم تاحال اس حوالے سے کوئی پیشرفت نہ ہوسکی۔

عوامی نیشنل پارٹی نے خیبرپختونخوا اسمبلی میں قرارداد جمع کرائی گئی جس میں حکومت سے قبائلی اضلاع کے انضمام کے حوالے سے واضح اور جامع روڈ میپ جاری کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔

رکن صوبائی اسمبلی شگفتہ ملک کی جانب سے جمع کرائی گئی قرارداد کے مطابق 25ویں آئینی ترمیم اور صدر کی جانب سے اس کی منظوری کو پانچ ماہ کا عرصہ ہوگیا تاہم تاحال اس حوالے سے کوئی پیشرفت نہ ہوسکی۔

قرارداد میں کہا گیا کہ آئین میں 25ویں ترمیم کا اضافہ ایک اہم سنگ میل تھا جس کے ذریعے وفاق کے زیرانتظام قبائلی علاقوں کو صوبے میں ضم کیا گیا۔

شگفتہ ملک نے حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ حکومت عدالتی دائرہ اختیار سمیت صوبائی محکمہ جات کے دائرہ کار کی توسیع کے حوالے سے روڈ میپ جاری کرنے میں ناکام ثابت ہوئی ہے۔

قرارداد میں مطالبہ کیا گیا کہ حکومت اس اہم مسئلے کے حل کیلئے تین دن کے اندر ایک جامع ٹائم ٹیبل تیار کرے تاکہ قبائلی اضلاع کا صوبے میں مکمل انضمام یقینی بنایا جاسکے۔

Show More
Back to top button