تعلیمی نظام کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کیلئے کوشاں ہیں. محمود خان

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ تحریک انصاف نے حکومت میں آتے ہی صوبے میں تعلیمی ایمرجنسی نافذ کرکے دیرپا اصلاحات متعارف کرائیں، ہم سرکاری سکولوں پر عوام کا اعتماد بحال کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں جو تعلیم کے لئے ہماری غیر معمولی دلچسپی اور پالیسیوں کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

کیڈٹ کالج کوہاٹ کے چوونویں (54)یوم والدین کی تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہو ئے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ صو بے میں موجود سرکاری تعلیمی اداروں کا معیار بلند کرنے کے ساتھ نئے تعلیمی ادارے بھی قائم کئے گئے ہیں جن میں مردان کیڈٹ کالج برائے خواتین کا قیام خصوصی اہمیت کا حامل ہے جو پاکستان بھر میں اپنی نوعیت کا پہلا اور منفرد ادارہ ہے، تعلیم کے ذریعے ہی امیر اور غریب کے درمیان خلاء ختم کیا جاسکتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم تعلیمی نظام کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے لئے کوشاں ہیں کیونکہ جدید دور کے چیلنجز سے نمٹنے کے لئے نئے تعلیمی رحجانات اور اسالیب سے آگاہی ناگزیر ہے۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ انہیں یہ دیکھ کر خوشی ہوئی کہ اساتذہ اور انتظامیہ کی محنت کی بدولت کیڈٹ کالج کوہاٹ کا شمار ملک کی بہترین درسگاہوں میں ہوتا ہے، یہ مثالی ادارہ اپنے قیام سے لے کر آج تک نہ صرف خیبر پختونخوا بلکہ پاکستان کے لیے بہترین تعلیمی خدمات سرانجام دے رہا ہے، اس درسگاہ میں کیڈٹس کی نصابی اور ہم نصابی سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ اخلاقی تربیت اور سیرت سازی سے متعلق جو لائحہ عمل تشکیل دیاگیا ہے قابِل تعریف ہے۔

وزیراعلیٰ نے امید ظاہر کی کہ اس ادارے سے فارغ طلباء ہماری جغرافیائی اور نظریاتی سرحدوں کی حفاظت یقینی بنائیں گے، یہی مقصد اور ولولہ ہمارے مجموعی تعلیمی نظام کے لئے ناگزیر ہے۔

انہوں نے واضح کیا کہ جب تک ہم اپنے نظام تعلیم کے مقاصد کا تعین نہ کرلیں، یہ نتیجہ خیز ثابت نہیں ہو سکتا، مہذب معاشروں میں تعلیم کو ہمیشہ اولین ترجیح حاصل رہی ہے کیونکہ تعلیم افراد کی تہذیب کرتی ہے اور یہی تہذیب قوموں کی ترقی کا زینہ بنتی ہے۔

بعدازاں وزیراعلیٰ نے تعلیمی سال 2019کے دوران سالانہ امتحانات اور نصابی و ہم نصابی مقابلوں میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے کیڈٹس میں میڈلز اور انعامات بھی تقسیم کئے۔

Show More
Back to top button