چارسدہ میں نچلے درجے کا سیلاب، گندم اور سٹرابیری کی فصل تباہ

 

حالیہ ہونے والے بارشوں کی وجہ سے چارسدہ میں دریائے سوات کے مقام پر پانی کا درجہ اوپر ہوگیا ہے اور پانی نے گاوں اور فصلوں کا رخ کر لیا ہے جسکی وجہ سے شولگرہ خٹ کورونہ مکمل زیرآب آگیا ہے اور زمینداروں کی تیارفصلے تباہ ہوگئی ہے۔

ایک زمیندارارشاد نے ٹی این این کو بتایا کہ اس نے کھیتوں میں گندم ،سٹرابیری اور گنے کی فصل اگائی ہوئی تھی جو کہ پانی میں ڈوب گئے ہیں۔ ارشاد کے مطابق بارشیں زیادہ ہونے کی وجہ سے یہاں ایک نالے میں پانی زیادہ ہوگیا ہے جو کھیتوں میں داخل ہوگیا ہے۔

ارشاد نے بتایا کہ سیلاب کی وجہ سے 50، 60 جیرب کے قریب اراضی میں موجود فصل تباہ ہوگیا ہے اور اب انکے گھروں میں پانی داخل ہونے کا خدشہ ہے لہذا حکومت کو چاہیے کہ انکی مدد کریں۔

ایک دوسرے زمیندار اسلم نے بتایا کہ اس نچھلے درجے کی سیلاب کا حکومتی اداروں کو پتہ چل گیا ہے لیکن ابھی تک کسی نے بھی ہمارا حال تک نہیں پوچھا۔ اسلم نے کہا کہ یہاں کے لوگ بہت غریب ہے اور انکا بہت نقصان ہوگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ فصلیں تو تباہ ہوگئی ہے تاہم اب پانی انکے کچے گھروں میں داخل ہونے کا اندیشہ ہے۔

مقامی لوگوں کے مطابق پانی کے تیز بہاو سے زمینداروں کا لاکھوں روپے کا نقصان ہوا ہے اور کچھ جگہوں پر پانی زیادہ ہونے کی وجہ سے زمینداروں کے گھروں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔

مقامی لوگوں نے حکومت اور متعلقہ اداروں سے مطالبہ کیا ہے انکے نقصانات کا ازالہ کریں اور ان کو مزید نقصان سے بچایا جائے۔

Show More
Back to top button