جعلی شناختی کارڈز کی تصدیقی مہم کا آج آخری دن

جعلی شناختی کارڈز کی تصدیقی مہم کا آج اخری دن ہے ۔ اس سے پہلے یہ ڈیڈلائن جولائی کا مہینہ تھا جسے بعد توسیع دیتے دیتے اکتوبر کی آخری تاریخ تک محدود کردیا گیا ۔ وزرت داخلہ سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق جعلی شناختی کارڈ رکھنے والے غیرملکیوں کیخلاف کارروائی منطقی انجام تک پہنچائی جائیگی۔ نادرا نے شہریوں کے شناختی کارڈ کی تصدیق کا پہلا مرحلہ مکمل کرلیا ہے جس کے دوران ایک ماہ میں ساڑھے دس کروڑ شناختی کارڈ ہولڈرز میں سے دو کروڑ چوبیس لاکھ افراد کی تصدیق ہوئی ہے۔ سینتیس لاکھ شہریوں نے نادرا ہیلپ لائن کو ایس ایم ایس بھیجے۔ جس میں سے چوبیس لاکھ تصدیقی ایس ایم ایس شامل ہیں۔ تصدیق کے باقی تمام مراحل آئندہ چھ ماہ میں مکمل ہوں گے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ زیادہ ترمشکوک شناختی کارڈزاورپاسپورٹ مشرف اور پیپلز پارٹی کے دور میں بنے۔ ہم تو شناختی کارڈ اور پاسپورٹ کیلئے آپریشن کلین اپ کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ اب تک بائیس ہزار جعلی شناختی کارڈز پکڑے جبکہ دو ہزار سے زائد پاسپورٹس معطل کیے گئے۔ انہوں نے خبردار کیا کہ جن غیرملکیوں نے شناختی کارڈزبنوائے ہیں ان کے خلاف اکتیس اگست سے کارروائی کا آغاز ہوگا۔ مقدمات درج ہوں گے اور ملک بدری ہوگی۔ چودہ سال سزا بھی ہوسکتی ہے۔ جعلی شناختی کارڈ رکھنے والے کی اطلاع دینے پر دس ہزار روپے انعام دیا جائے گا

Show More
Back to top button