گورنر خیبر پختونخوا نے استعفیٰ دیدیا

پشاور (ٹی این این) گورنرخیبرپختونخواسردارمہتاب احمدخان نے مستعفی ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے وزیراعظم نوازشریف کوپہلے سے بتادیا تھا کہ لمبے عرصے تک یہ مصروف عہدہ نہیں رکھ سکتا۔ فیصلہ ذاتی وجوہات کی بناء پرکیا،پوری اعتماد کے ساتھ جارہوں،قبائلی علاقوں کے حوالے جو بھی فیصلے کئے سب کی ذمہ داری لیتا ہوں، بحیثیت گورنر فاٹا میں سول انتظامیہ کو بااختیار بنانے میں لگا رہا ۔
گورنرہاؤس میں صحافیوں کو اپنے 22ماہ کے دوراقتدار کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے گورنر خیبرپختونخوا نے کہاکہ 15اپریل2014کوجب عہدہ سنبھالاتوقبائلی علاقہ جات میں حالات خراب تھے لیکن تمام چیلنجز کوقبول کرتے ہوئے فاٹاکی ترقی وبحالی کیلئے اقدامات اٹھائے ،آپریشن ضرب عضب کامیابی سے جاری ہے آئی ڈی پیز کے معاملے میں صوبائی حکومت نے ہر ممکن تعاون کیا ۔
گورنر نے کہا کہ ماضی میں قبائلی علاقوں کی تعمیروترقی کو توجہ نہیں دی گئی لیکن ہم نے اس روایت کو ختم کیا ، گورنر ہاؤس میں سانحہ آرمی پبلک سکول اور پاک چین اقتصادی راہداری پر اپنابھرپورکرداراداکیا جبکہ سیاسی وابستگی کے باوجود صوبے کے حقوق کے لئے بھرپورآواز اٹھائی،گورنر خیبر پختونخوا نے کہاکہ تیس سال سے سیاست میں ہوں گورنرکے عہدے سے استعفیٰ کسی کے دباؤمیں نہیں بلکہ ذاتی وجوہات کی بناء پر سوچ سمجھ کر کیا ،گورنر نے کہا کہ قبائلی علاقوں میں بہتری کی بنیاد رکھ دی ہے اب جوبھی آئے وہ اسے آگے بڑھائیگا۔انہوں نے کہاکہ جتنے بھی فیصلے کئے انفرادی واجتماعی سب کی ذمہ داری لیتا ہوں ۔

Show More
Back to top button