وفاقی کابینہ نے بھارت کے ساتھ دوطرفہ تجارت معطل کرنے کی منظوری دیدی

وفاقی کابینہ نے بھارت کے ساتھ دوطرفہ تجارت معطل کرنے کی منظوری دیدی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت ہونے والے وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں بھارت سے درآمدات اور برآمدات پر مکمل پابندی عائد کردی گئی تاہم اس پابندی سے افغانستان کے ساتھ ہونے والی تجارت متاثر نہیں ہوگی۔

ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ نے سمجھوتہ ایکسپریس اور تھر ایکسپریس بند کرنے کے فیصلے کی بھی توثیق کی ہے۔

یاد رہے کہ 7 اگست کو قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں بھارت سے دو طرفہ تجارت معطل اور سفارتی تعلقات محدود کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

اجلاس میں ہونے والے فیصلوں سے متعلق جاری اعلامیے میں کہا گیا کہ بھارت سے ہر قسم کی تجارت فوری طور پر معطل اور سفارتی تعلقات محدود کیے جائیں گے اور مقبوضہ کشمیر کا معاملہ اقوام متحدہ میں اٹھایا جائے گا۔

اعلامیہ کے مطابق پاکستان اور بھارت کے درمیان باہمی انتظامات کا ازسرنو جائزہ لینے اور  14 اگست کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے طور پر جبکہ 15 اگست کو بھارت کے یوم آزادی پر یوم سیاہ منانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

Show More
Back to top button