جانے کی باتیں ہوگئیں پرانی‘ اب آجاو

پشاور سمیت ملک کے متعدد شہروں کی سڑکوں پر آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے حوالےسے بینرز اویزاں کئے گئے ہیں جس پر فوج‘ حکومت اور اپوزیشن کی جانب سے مختلف موقف سامنے آئے ہیں۔ آرمی چیف کی تصاویر والے بینرز پر لکھا گیا ہے کہ ’’جانے کی باتیں ہوگئی پرانی اب آجاو‘‘ یعنی حکومت کا تختہ پلٹنے کےلئے آجائو۔ بینرز پنجاب کی ایک تننظیم ’’ مو ان پاکستان‘‘ نے اویزاں کئے ہیں جس کے بارے میں عام تاثر یہ ہے کہ یہ فوج کی ایما پر لگائے گئے ہیں تاہم گزشتہ شب آئی ایس پی آر کے ترجمان لیفٹننٹ جنرل عاصم باجوہ نے واضح کیا ہے کہ بینرز اویزاں کرنے کے معاملے میں فوج یہ اس سے وابستہ کسی دوسرے ادارے کا کوئی تعلق نہیں۔ وفاقی وزیر اطلاعات پرویزرشید نے بھی اس اقدام پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے آرمی چیف کے بارے میں لوگوں کے دلوں میں شکوک و شبہات پیدا ہورہے ہیں اور آپریشن ضرب عضب پر بھی اثرات مرتب ہونگے۔ دوسری جانب پیپلز پارٹی کے سینیٹر اعتزاز  احسن نے الزام عائد کیا ہے کہ بینر اویزاں کرنا حکومتی چال ہے جس کا مقصد ملک میں مارشل لگنے کا خوف پیدا کرنا ہے اور لوگ پانامہ لیکس کو بھول جائیں گے،انہوں نے واضح کردیا کہ حقیقت میں فوج کا حکومت پر قبضے کا کوئی ارادہ نہیں۔

Show More
Back to top button