قبائلی اضلاع میں میٹرک پاس اساتذہ بھرتی کرنے کا فیصلہ

 

خیبرپختونخوا حکومت نے نئے ضم شدہ قبائلی اضلاع میں 5 ہزاراساتذہ بھرتی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ فیصلہ صوبائی محکمہ تعلیم کی جانب سے کیا گیا ہے جس کے تحت میٹرک اور ایف اے کرنے والے بھی سرکاری استاد کے حیث پربھرتی ہوسکیں گے۔ محکمہ تعلیم کے مطابق اساتذہ مقامی افراد سے بھرتی کئے جائیں گے جو اپنے علاقوں میں بچوں کو تعلیم دیں گے۔

اس حوالے سے تعلیم کے لیے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا ضیاء اللہ بنگش نے کہا ہے کہ اساتذہ کی تعیناتی کے لیے تعلیم کی حد میٹرک اور ایف اے مقرر کرنے کا مقصد قبائلی اضلاع کے نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ قبائلی اضلاع میں پسماندگی کے پیش ںظر فیصلہ کیا گیا کیونکہ دوسرے علاقوں کی نسبت قبائلی اضلاع میں تعلیم کا معیاراچھا نہیں ہے۔ مشیرتعلیم نے یہ بھی کہا کہ صوبے میں 65 ہزار اساتذہ کی بھرتی کا ہدف رکھا ہے۔

ضیاء اللہ بنگش نے کہا کہ 5 ہزار اساتذہ بھرتی ہونے سے قبائلی اضلاع میں تعلیمی ادارے فعال ہوجائیں گے اور نوجوانوں کو روزگاربھی میسرہوجائے گا۔

Make Money with 1xBet
Show More
Back to top button