باڑہ پریس کلب میں علاقائی مسائل پر سیمینار کا انعقاد

قبائلی ضلع خیبر کی تحصیل باڑہ میں انجمن تاجران باڑہ اور باڑہ پریس کلب کے زیراہتمام ایک سیمینار منعقد ہوا جس میں مختلف قبائل کے مشران، سیاسی و سماجی تنظیموں کے نمائندوں اور نوجوانوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

باڑہ پریس کلب میں منعقدہ سیمینار کے دوران ایک قرارداد پیش کی گئی جس میں حکومت سے تباہ شدہ کاروبار اور تعلیمی اداروں کی بحالی سمیت دیگر مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔

قرارداد میں صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ ضلع خیبر میں تحصیل باڑہ کی آبادی کو مدنظر رکھتے ہوئے منتخب ایم پی اے کو صوبائی کابینہ کا حصہ بنایا جائے، باڑہ کو معاشی اور اقتصادی طور پر مستحکم کرنے کے لیے افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کو فوری طور پر کھولنے کی اجازت دی جائے اور تباہ شدہ سکولوں پر جلد ازجلد تعمیراتی کام شروع کیا جائے۔

سمینار سے خطاب کرتے ہوئے مشران نے باڑہ بازار میں 12 ہزار تباہ شدہ دوکانوں کی دوبارہ تعمیر، تاجروں کو آسان شرائط پر مالی امداد، آپریشنوں سے تباہ شدہ مکانات کے معاوضوں کا طریقہ کار آسان بنانے، باڑہ میں بجلی کی ظالمانہ تقسیم اور ناروا لوڈ شیڈنگ سمیت دیگر علاقائی مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کا مطالبہ کیا۔

اس موقع پر تاجر برادری اور باڑہ پریس کلب کی نگرانی میں باڑہ کے تمام سیاسی و سماجی علاقائی مشران، یوتھ اور ہر مکاتب فکر کے لوگوں پر مشتمل باڑہ قومی کونسل بھی تشکیل دی گئی۔

کونسل درپیش علاقائی مسائل کی نشاندہی کرے گی اور ایم این اے اور ایم پی اے اور مشران کو اعتماد میں لیتے ہوئے مسائل کا حل نکالنے کے لیے عملی اقدامات کرے گی۔

انجمن تاجران باڑہ اور باڑہ پریس کلب کی صحافی برادری نے آئندہ کیلئے لائحہ عمل طے کرنے کے لیے اجلاسوں کا تسلسل برقرار رکھنے کا فیصلہ بھی کیا۔

Make Money with 1xBet
Show More
Back to top button